230

ملزمان کو پکڑنے کے لیے رکھی گئی لڑکی کو آے ایس آئی نے زیادتی کا نشانہ بنا دیا

تفصیلات کے مطابق لڑکی اور اسکےباپ نے اوباش افراد کیخلاف تھانہ اروپ میں درخواست دی، دوران تفتیش اے ایس آئی نے ہی مبینہ طور پر لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنادیا۔

گوجرانوالہ کے اروپ تھانہ میں لڑکی نے اوباش افراد کی طرف سے جھگڑے کے دوران کپڑے پھاڑنے کی درخواست دی ، جس پر اے ایس آئی مبشر کو انکوائری آفیسر مقرر کیا۔ جھگڑے کا واقعہ تھانہ اروپ کے علاقے بسمہ اللہ کالونی میں 9 ستمبر کو پیش آیا۔

جب لڑکی تھانے میں گئی تو اے ایس آئی نے اسے اپنے زاتی کمرہ میں زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا اور اسکے بعد لڑکی کے خاندان کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دیتا رہا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں